گال ٹیسٹ، سری لنکن ٹیم 222 رنز بنا کر آل آئوٹ ، پاکستان کے 2 وکٹوں پر 24 رنز

گال میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں سری لنکا کی پوری ٹیم 222 رنز بنا کر پوویلین لوٹ گئی ہے

گال ٹیسٹ، سری لنکن ٹیم 222 رنز بنا کر آل آئوٹ ، پاکستان کے 2 وکٹوں پر 24 رنز

 گال میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں سری لنکا کی پوری ٹیم 222 رنز بنا کر پوویلین لوٹ گئی ہے جس کے جواب میں کھیل کے اختتام تک پاکستان نے 2 وکٹوں کے نقصان پر 24 رنز بنا لیے۔ سری لنکا نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا جس پر اوشادہ فرنینڈو اور کپتان دیمتھ کرونارتنے نے میدان میں اتر کر کھیل کا آغاز کیا لیکن اوپننگ پر آنے والے کپتان دیمتھ کرونارتنے 11 رنز کے مجموعے پر صرف 1 رن بنا کر شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر بولڈ ہو گئے ۔
سری لنکا کی دوسری وکٹ 60 رنز کے مجموعے پر کوشل مینڈس کی گری جو کہ 21 رنز بنا کر پاکستانی سپنر یاسر شاہ کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو کر پولین لوٹ گئے۔ پاکستانی باؤلر حسن علی نے میزبان ٹیم کا تیسرا شکار اوپننگ پر آنے والے اوشادہ فرنینڈو کا کیا، وہ 35 رنز بنا کر وکٹ کیپر محمد رضوان کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

چوتھے نمبر پر آنے والے انجیلو میتھیوز صفر توڑنے میں بھی کامیاب نہیں ہوئے اور یاسر شاہ کی گیند پر نسیم شاہ کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

دوسرے سیشن کے آغاز پر سری لنکن بلے باز دھننجیا ڈی سلوا 14رنز پر شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر کلین بولڈ ہوئے جبکہ نرشون ڈکویلا بھی شاہین آفریدی کی گیند پر صرف 4رنز بنا کر آغا سلمان کے ہاتھو ں کیچ آؤٹ ہوئے۔ سری لنکا کی ساتویں وکٹ 130رنز کے مجموعے پر رمیش مینڈس کی گری جو 11رنز بنا کر نسیم شاہ کی گیند پر محمد رضوان کے ہاتھو ں کیچ آوٹ ہوئے جب کہ آٹھویں وکٹ پرباتھ جے سوریا کی 133رنز پر گری جو صرف تین رنز بنانے میں ہی کامیاب ہوئے اور محمد نواز کی گیند کا شکار ہوئے۔
سری لنکا کی جانب سے دنیش چندیمل نے بہترین بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹیم کو بڑی سپورٹ فراہم کی ، دس چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 75 رنز کی اننگ کھیلی اور یاسر شاہ کی گیند پر حسن علی کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہو گئے ۔ پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ 4 وکٹیں شاہین شاہ آفریدی نے حاصل کیں جبکہ ان کے علاوہ حسن علی اور یاسر شاہ نے 2،2 کھلاڑیوں کو پولین پہنچایا، نسیم شاہ اور محمد نواز نے ایک ایک کھلاڑی کو آوٹ کیا۔
پاکستان کی جانب سے سری لنکا کے 222 رنز کے خلاف عبداللہ شفیق اور امام الحق نے میدان میں اتر کر کھیل کا آغاز کیا لیکن امام الحق صرف 2 رنز ہی بنانے میں کامیاب ہوئے اور آوٹ ہو گئے جبکہ ان کے ساتھ اوپننگ پر آںے والے عبداللہ شفیق بھی کوئی خاصی کارکردگی دکھانے میں کامیاب نہیں ہوئے اور 13 سکور بنا کر پولین لوٹ گئے ۔ اس سے قبل سری لنکن کپتان ڈیمتھ کرونارتنے نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کرنے کے بعد کہا کہ پچ بیٹنگ کیلئے سازگار ہے ،کوشش ہوگی پہلی اننگز میں بڑا ٹوٹل لگائیں اور پاکستانی ٹیم کو پریشر میں لائیں۔
اس موقع پر قومی ٹیم کے کپتان بابراعظم نے کہا کہ پاکستان کیلئے آل راؤنڈر سلمان علی آغا ڈیبیو کررہے ہیں جبکہ محمد نواز اور یاسر شاہ قومی ٹیم میں واپسی ہوئی ہے۔ پاکستان کا سکواڈ کپتان بابراعظم، عبداللہ شفیق، امام الحق، اظہر علی، محمد رضوان، آغا سلمان، محمد نواز، یاسر شاہ، حسن علی، شاہین شاہ آفریدی اور نسیم شاہ پر مشتمل ہے جب کہ سری لنکا کے سکواڈ میں کپتان ڈیموتھ کرونارتنے، اوشادا فرنینڈو، کوشل مینڈس، اینجلو میتھیوز، دھننجایا ڈی سلوا، دنیش چندیمل، نروشن ڈکویلا، رمیش مینڈس، مہیش تھیکشنا، پربت جے سوریا اور کسن راجیتھا شامل ہیں۔
دوسری جانب سلمان علی آغا نے سابق ٹیسٹ کرکٹر محمد یوسف سے ٹیسٹ کیپ حاصل کی، کرکٹر کو مڈل آرڈر بیٹر فواد عالم کی جگہ ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

What's Your Reaction?

like

dislike

love

funny

angry

sad

wow